آج کا ایشواخبار

موٹروے زیادتی کیس کا مرکزی ملزم کون ؟ اس سے پہلے کیا کیا جرم کیے؟

لاہور : موٹروے زیادتی کیس میں بڑی پیشرفت، مرکزی ملزم کا ڈین اے میچ ہوگیا، ملزم کی شناخت عابد علی کے نام سے کرلی گئی ہے۔ پولیس ذرائع کے مطابق ملزم کا پہلے ہی کریمنل ریکارڈ موجود ہے، ملزم کا ڈی این اے 2013 کے ڈیٹا بیس سے میچ ہوا۔ملزم عابد ملہی فورٹ عباس کا رہائشی ہے، متاثرہ خاتون کے کپڑوں سے ملنے والے نمونے کریمنل ڈیٹا بیس سے میچ ہوئے۔ پولیس کے مطابق کریمنل ڈیٹا بیس میں ملزم عابد ملہی 2013 سے موجود ہے، ملزم عابد ملہی کو تاحال گرفتار نہیں کیا گیا، ملزم کی گرفتاری کیلئے سی ٹی ڈی کی ٹیمیں چھاپے مار رہی ہیں۔ ملزم کے بارے میں تفصیلات وزیراعلیٰ کی زیر صدارت موٹروے واقعہ کی تحقیقاتی کمیٹی کا اجلاس میں بتائی گئیں۔ اجلاس میں عثمان بزدار نے کمیٹی کو تحقیقات جلد مکمل کرنے کی ہدایت کر دی گئی۔ وزیراعلیٰ پنجاب کا کہنا تھا موٹر وے پولیس کی تعیناتی تک پنجاب پولیس فرائض سرانجام دے گی، دلخراش واقعہ میں ملوث ملزمان سزا سے نہیں بچ پائیں گے۔ عثمان بزدار نے کہا ہے کہ متاثرہ خاندان کو انصاف کی فراہمی تک چین سے نہیں بیٹھوں گا، پنجاب حکومت اور پوری قوم متاثرہ خاندان کے ساتھ ہے، متاثرہ خاتون کو فوری انصاف دلانا ریاست کی ذمہ داری ہے۔

 گجرپورہ لنک روڈ زیادتی کیس کا مرکزی ملزم پہلے بھی لوٹ مار اور زیادتی کی وارداتوں میں ملوث رہا ہے۔

گجرپورہ لنک روڈ زیادتی کیس کا مرکزی ملزم عابد علی ملہی ولد اکبر علی ریکارڈ یافتہ نکلا، ذرائع کےمطابق ملزم پہلے بھی لوٹ مارسمیت زیادتی کی وارداتوں میں ملوث رہا اور اور اسی سڑک پر لوٹ مارکرچکاہے۔ ملزم کی عمر27سال ہے اور وہ فورٹ عباسی کا رہائشی ہے۔ پنجاب پولیس کے مطابق ملزم نے ساتھیوں کے ساتھ ملکر 2013میں گھرمیں گھس کرماں بیٹی سے زیادتی کی تھی۔ ملزم عابد علی سترہ سال کی عمر سے متعدد جرائم کرتا رہا ہے اور اس نے ایک گروہ بنا رکھا تھا ۔ زیادتی کے ایک واقعے کے بعد ہی ملزم عابد علی اور اس کے خاندان کو گاوں بدر کر دیا گیا تھا۔ملزم کے خلاف مختلف تھانوں میں آٹھ سے زائد مقدمات درج ہیں ۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button